صفحہ اول » انجئرنگ » کمپیوٹر سائنس اور انجینئرنگ

کمپیوٹر سائنس اور انجینئرنگ

Zindagi ke Raste-science
کمپیوٹر اس صدی کی سب سے حیرت انگیز ایجاد ہے۔ موجودہ نسل کے جو بچے اس وقت اسکولوں میں زیرِ تعلیم ہیں

کمپیوٹر اس صدی کی سب سے حیرت انگیز ایجاد ہے۔ موجودہ نسل کے جو بچے اس وقت اسکولوں میں زیرِ تعلیم ہیں ،ان میں سے بعض کو یہ سہولت حاصل ہے کہ وہ کمپیوٹر سے اسکول کی تعلیم کے دوران واقف ہوجاتے ہیں (ممکن ہے کہ آنے والے برسوں میں یہ سہولت اسکول میں پڑھنے والے ہر بچے کو میسر ہو) ۔ہر نوعیت کے چھوٹے بڑے دفتروں میں ،صنعت میں، زراعت میں، کاروبار میں ، ذرائعِ ابلاغ میں، خلا، فضا، زمین اور سمندر کی سواریوں میں غرض زندگی کا کون سا شعبہ ہے جہاں کمپیوٹر کی کار گزاری کار فرما نہیں ہے۔ یہ کہا جائے تو غلط نہیں ہوگا کہ مستقبل کمپیوٹر کا ہے۔
پاکستان میں کمپیوٹر سے متعلق پیشوں کا آغاز 1961ء سے ہوا، جب آئی بی ایم نے ملک میں پہلا کمپیوٹر درآمد اور نصب کیا۔ گزشتہ برسوں میں کمپیوٹر کے شعبے میں خاصی پیش رفت ہوئی ہے اور کاروباری و صنعتی زندگی میں کمپیوٹر کا استعمال مسلسل بڑھ رہا ہے۔
کمپیوٹر کی افادیت اور اس کے روز افزوں استعمال کی رفتار کے پیش نظر ساتویں عشرے میں کمپیوٹر کی باقاعدہ تعلیم کی ابتدا ہوگئی اور سب سے پہلے قائد اعظم یونی ورسٹی اسلام آباد میں کمپیوٹر کی ڈگری کلاسوں کا آغاز ہوا۔
کمپیوٹر سے متعلق پیشوں میں چار شعبے ہیں جہاں کوئی نوجوان ضروری تعلیم حاصل کرکے اپنا مستقبل تلاش کرسکتا ہے۔ ان چار شعبوں میں سے تین براہِ راست کمپیوٹر سے متعلق ہیں۔

1۔سسٹمز: اس شعبے میں سسٹمز اینالسٹس اور پروگرامر شامل ہیں۔ ایک پروگرامر اپنے کام کا اچھا خاصا تجربہ حاصل کرلے تو اسے سسٹمز اینالسٹ کے عہدے پر کام کرنے کا موقع مل سکتا ہے۔ جس طرح سول انجینئرنگ میں ایک آرکیٹیکٹ، عمارت کا تفصیلی نقشہ تیار کرتا ہے اسی طرح کمپیوٹر کے شعبے میں سسٹمز اینالسٹ، کسی پروگرام کا تفصیلی خاکہ تیار کرتا ہے کہ یہ پروگرام کس مقصد کے لیے ہے اور اس میں کن کن امور کو اہمیت دی جانی چاہیے۔ پروگرامر ایک ایسے مستری کی مانند ہوتا ہے جو آرکیٹیکٹ کے نقشے کے مطابق عمارت تعمیر کرتا ہے۔ پروگرامر، سسٹمز اینالسٹ کے تیار کردہ خاکے کی تفصیلات کے مطابق پروگرام تیار کرتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

Three-Types-of-Learners

سیکھنے کے تین انداز

معلومات حاصل کرنے، حاصل ہونے والی معلومات کو سمجھنے اور اس کی مدد سے مسئلے …